کرونا وائرس: تمباکو نوشی کرنے والے افراد خطرے میں

0
23


عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ تمباکو نوشی کرونا وائرس سے جڑے خطرات میں اضافہ کردیتی ہے، سگریٹ نوش افراد کو کووڈ 19 سے موت کا خطرہ 50 فیصد زیادہ ہوتا ہے۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیڈروس ادہانم کا کہنا ہے کہ کووڈ 19 کی وجہ سے بیماری کے سنگین ہونے اور اموات کے خطرات سگریٹ نوشی کرنے والوں کو 50 فیصد زیادہ لاحق ہوتے ہیں، ضروری ہے کہ سگریٹ نوشی ترک کر کے کرونا وائرس کے خطرات کو کم کیا جائے۔

عالمی ادارہ صحت کی تمباکو نوشی کے خلاف مہم نے ایک ارب سے زائد سگریٹ نوشوں کو ٹول کٹ سے وسائل میسر کیے ہیں۔ اس مہم میں 29 ممالک کو مرکزی توجہ دی گئی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر ہیلتھ پروموشن ڈاکٹر روڈیگر کرچ کا کہنا تھا کہ عالمی ادارے کی اس مہم میں تمام ممالک کو کردار ادا کرنا چاہیئے۔

عالمی ادارہ صحت کے مطابق دنیا بھر میں 39 فیصد مرد اور 9 فیصد خواتین تمباکو نوشی کرتی ہیں، سگریٹ نوشی کی سب سے زیادہ شرح والے ممالک یورپ میں ہیں جہاں یہ شرح 26 فیصد ہے اور اندازوں کے مطابق اگر ان کی حکومتوں نے فوری اقدام نہ کیے تو سنہ 2025 تک ان کی تعداد میں صرف 2 فیصد کمی متوقع ہے۔

Comments





Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here